Flydubai announces special flights to India, Pakistan and 9 other destinations

خلیج ٹائمز نیوز ایجنسی کی آج  کی شائع کردہ  خبر کے مطابق فلائی دُبئی اِئیر لائن  نے ایک دفعہ پھر پاکستان اور انڈیا سمیت  کل گیارہ ممالک کے لیے پروازیں شروع کرنے کا اِعلان کر دیا ہے۔ فلائی دُبئی کے نمائندوں کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ یہ پروازیں متحدہ عرب امارات میں پھنسے غیر ملکیوں کی وطن واپسی کے لیے شروع کی جارہی ہیں۔ یہ پروازیں یک طرفہ ہوں گی اور  دُبئی انٹرنیشنل اِئیرپورٹ کے ٹرمینل 2 سے چلائی جائیں گی  ان پروازوں کے لیے ٹکٹ فلائی دبئی اِئیر لائن کی اپنی ویب سائٹ پہ آن لائن خریدی جاسکتی ہیں۔

واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات کی حکومت کی جانب سے فلائی دُبئی سمیت دیگر 3 اماراتی اِئیرلائنز کو پہلے ہی پروازوں کی اجازت مل چکی ہے تاہم پاکستان ، اِنڈیا سمیت دیگر  کئی ممالک سے اِن باؤنڈ پروازوں کی اجازت ملنا ابھی باقی ہے فلائی دبئی کے مطابق ٹکٹ کے لیے ادا کی جانے والی رقم ناقابل واپسی ہو گی اس لیے ہم اپنے پڑھنے والوں سے گذارش کرتے ہیں کہ جب تک آپ کی ایمبیسی یا حکومت کی جانب سے فلائی دبئی کو پروازوں کی اجازت نہ مل جائے تب تک ٹکٹ نہ خریدی جائے فلائی دبئی انتظامیہ کی جانب سے بھی یہی ہدایت کی گئی ہے کہ ٹکٹ خریدنے سے پہلے اپنے ملک کی ایمبیسی سے معلومات ضرور حاصل کر لی جائیں آیا کہ آپکو فلائی دبئی کی ٹکٹ خریدنی چاہیے یا نہیں۔ کوئی بھی فلائٹ اگر کینسل ہو نے کی صورت میں متعلقہ مسافروں کو ادا کردہ رقم کے بجائے فلائی دبئی کا ایک ووچر دیا جائے گا۔ مزید اگر کوئی مسافر خود سے فلائٹ پہ سفر نہیں کرے گا تو اسکی ٹکٹ ضائع ہو جاۓگی

فلائی دبئی اِئیر لائن نے جن ممالک کے لیے وطن واپسی کی پروازوں کا اعلان کیا ہے ان میں پاکستان، انڈیا، بنگلہ دیش،   ایران، بلغاریہ، فن لینڈ، جارجیا، کرغیزستان،  رومانیہ، سربیا اور یوکرین شامل ہیں فلائی دبئی ائیرلائن دبئی کی ایک سستی ائیر لائن سمجھی جاتی ہے تاہم حالیہ صورتحال میں اس اِئیر لائن کی طرف سے پہلے بھی کئی دفعہ پروازیں  شروع کرنے کا اِعلان کیا جا چکا ہے جس کے باوجود پروازیں شروع نہ کی گئیں۔ توقع ہے کہ اس دفعہ فلائی دبئی کچھ نہ  کچھ پروازیں ضرور شروع کر دے گی۔

فلائی دبئی کی انتظامیہ کی جانب سے یہ واضح طور پہ کہا گیا ہے کہ تمام پروازوں کا چلنا متعلقہ ممالک کے حکام کی جانب سے اجازت ملنے سے مشروط ہے لہٰزا تمام صارفین اس سلسلے میں محتاط رویہ اختیار کریں تاکہ کسی کی رقم ٹکٹ کی مد میں پھنس نہ جائے۔

نیوز کا سورس خلیج ٹائمز

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: