Who can get UAE visa extension and amnesty – Big Announcements by UAE Govt.

متحدہ عرب امارات کے ویزوں کے حوالے سے اس وقت دیگر غیر ملکیوں سمیت پاکستانی بھی کافی تذبذب کا شکار ہیں کیونکہ اماراتی حکومت کی جانب سے ویزوں کی توسیع اور ایمنسٹی یعنی معافی کے لیےمختلف اعلانات کیے جا چکے ہیں بہت سے دوست اس چیز کو سمجھ نہیں پا رہے کہ ویزوں کے نئے اِعلانات میں سے کون سا اِعلان اور ضابطہ ان پہ لاگو ہوتا ہے آج ہم آپ  کو یہی چیز سمجھانے کی کوشش کریں گے آپ اس مضمون کو  نیچے موجود واٹس ایپ یا فیس بک بٹن پہ کلک کرکے اپنے دوستوں کے ساتھ ضرور شئیر کیجئیے گا۔

 پہلی کیٹیگری میں وہ لوگ آتے ہیں کہ جن کے ویزے یکم مارچ 2020  یا اس کے بعد ایکسپائر ہوئے ہیں ۔ایسے لوگوں کو فکر کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے کیونکہ ایسے تمام لوگوں کے ویزوں میں 31 دسمبر 2020 تک تو سیع کردی گئی ہے  اس میں تمام طرح کے ویزے شامل ہیں مثال کے طور پہ وزٹر ویزا، ٹورسٹ ویزا، ورک ویزا  اور دیگر ریذیڈنسی یا  اقامتی ویزا۔ ویزوں کے ساتھ ساتھ یہ توسیع امارات شناختی کارڈز میں بھی دے دی گئی ہے لہٰذا یکم مارچ 2020 یا اسکے ایکسپائر ہونے والے اماراتی شناختی کارڈز  میں بھی 31 دسمبر 2020 تک توسیع کر دی گئی ہے واضح رہے کہ تمام طرح کے ویزوں اور اماراتی شناختی کارڈز میں اس توسیع کو حاصل کرنے کے لیے آپکو کہیں جا کے درخواست دینے کی کوئی ضررورت نہیں ہے۔ خودکار سسٹم کے ذریعے اماراتی حکومت کے ریکارڈ میں آپکے  ویزے اور اماراتی آئی ڈی کارڈ کی میعاد 31 دسمبر 2020 تک بڑھا دی گئی ہے یہ قانون نہ صرف متحدہ عرب امارات میں موجود غیر ملکیوں کے لیے  ہے بلکہ یو اے ای سے باہر موجود غیر ملکیوں کے  لیے بھی ہے یعنی متحدہ عرب امارات سے باہر موجود  غیرملکیوں کے ویزے اور اماراتی شناختی کارڈز کی میعاد بھی31 دسمبر2020 بڑھا دی گئ ہے۔  اگر آپ اپنے ویزے کی میعاد چیک کرنا چاہتے ہیں تو نیچے موجود لنک پہ کلک کیجیئے ، اس کے بعد جو ویب پیج اوپن ہو گا اس پہ جا کے آپ فائل نمبر سیلیکٹ کریں، فائل نمبر آپکے ویزے پہ لکھا ہوتا ہے، اپنا نام، نیشنیلٹی اور تاریخ پیدائش درج کرکے سرچ پہ کلک کردیں

Link: https://bit.ly/2MxP3Ey

دوسری کیٹیگری ایسے لوگو ں کی ہے کہ جن کے ویزے  یکم مارچ سے پہلے ایکسپائر ہوئے ہیں ایسے لوگوں کے ویزوں اور اماراتی شناختی کارڈذ کو 31 دسمبر 2020 تک کی کوئی توسیع نہیں دی گئی بلکہ ان کو ایمنسٹی  دینے کا اِعلان کیا گیاہے ایمنسٹی یعنی معافی کے اس اِعلان کے تحت ایسے لوگوں کے لیے لازمی ہوگا کہ وہ  18 اگست سے پہلے پہلے متحدہ عرب امارات سے نکل جائیں اس صورت میں کوئی جرمانہ عائد نہیں کیا جائے گا کسی قسم کی کوئی سزا نہیں دی جائے گی پاسپورٹ پہ بھی  ڈی پورٹ وغیرہ  کی کوئی مہر نہیں لگائ جائے گی مزید ایسے لوگوں پہ آئندہ متحدہ عرب میں داخلہ پہ بھی کوئی پابندی نہیں عائد نہیں کی جائے گی  ویزا لے کے وہ دوبارہ متحدہ عرب امارا جا سکیں گے ۔تازہ ترین خبروں کے مطابق جو لوگ بھی بغیر جرمانے کے متحدہ عرب امارات سے نکلنا چاہتے ہیں تو ان کے لیے ضروری ہے کہ وہ اپنے پاسپورٹ اور اپنے ملک جانے کی فلائٹ ٹکٹ کے ہمراہ  ابو ظہبی، شارجہ  یا راس الخیمہ اِئیرپورٹ پہ فلائٹ کے ٹائم سے کم از کم6 گھنٹے پہلے پہنچ جائیں اور ائیرپورٹ پہ موجود امیگریشن سے رجوع کریں اِئیرپورٹ پہ موجود امیگریشن اسی وقت ان کی ایمنسٹی کے پراسیس کو مکمل کر کے ان کو اس وقت ملک سے نکلنے کی اجازت دے دی گی، اس کے علاوہ جو لوگ دُبئی اِئیرپورٹ سے جانا چاہتے ہیں تو ان کے لیے لازمی ہے کہ وہ فلائٹ کے ٹائم سے 48 گھنٹے پہلے دُبئی اِئیرپورٹ کی امیگریشن کے پاس رپوٹ کریں۔ واضح رہے کہ جس اِئیرپورٹ کی ٹکٹ کروائیں گے اسی اِئیرپورٹ کی امیگریشن کو رپوٹ کرنا ہوگی

مندرجہ بالاامور یا ویزوں سے متعلق کسی بھی قسم کی کوئی معلومات چاہئیے ہوں تو آپ متحدہ  عرب امارات کے آمر ویزا سنٹر کو ای میل  یا فون کال کر سکتے ہیں ان کا ای میل اور فون نمبر درجہ ذیل ہے

Email: Amer@dnrd.ae

toll-free number (800 453)

Phone: 0800 5111

تیسری کیٹیگری ان لوگوں کی ہے  جو چھٹی  پہ  متحدہ عرب امارات سے باہر گئے تھے مگر فلائٹس بند ہو جانے کی وجہ سے واپس متحدہ عرب امارات نہیں جا سکے ۔ ایسے لوگوں کی لیے بھی فکر کی کوئی بات نہیں ہے  کیونکہ ایسے لوگوں کے ویزوں اور آئی ڈی کارڈز میں بھی 31 دسمبر 2020 تک کی توسیع کردی گئی ہے لہٰذا اگر کسی کو متحدہ عرب امارات سے باہر 180 دنوں سے زائد  وقت گزر چکا ہے تو بھی فکر کی کوئی بات نہیں ۔ تاہم ابھی متحدہ عرب امارات نے یکم جون2020 سے ریذیڈنسی ویزا والوں کے واپسی کا عمل شروع کردیا ہے  مگر فی الحال یہ صرف انہی غیر ملکیوں کے لیے ہے کہ جن کے پاس اماراتی آئی ڈی کارڈ بھی ہے یعنی جو چھٹی وغیرہ پہ گئے ہوئے ہیں  اس کے لیے آپ نیچے موجود لنک پہ جا کے اِنٹری پرمٹ کے لیے آن لائن اپلائی کردیں جب آپکو اِنٹری پرمٹ مل جائے تو اسکے بعد آپ ٹکٹ کروا کے متحدہ عرب امارات جاسکیں گے

Link: https://bit.ly/2TjwHuD

چوتھی کیٹیگری میں ایسے لوگ ہیں کہ جو متحدہ عرب امارات میں موجود ہیں اور ان کے ویزے کینسل ہو چکے ہیں چاہے یکم مارچ سے پہلے یا یکم مارچ کے بعد۔  ایسے لوگوں کے ویزوں میں فی الحال نہ تو کوئی توسیع کی گئی ہے اور نہ انکو  ایمنسٹی سکیم میں شامل کیا گیا ہے گلف نیوز کے شائع کردہ آرٹیکل کے مطابق ایسے لوگوں کے لیے ضروری ہے کہ یا تو نئی جاب ڈھونڈ کے ورک ویزا حاصل کریں یا پھر کسی ٹریول ایجنسی وغیرہ کے ذریعے وزٹ ویزا حاصل کرکے اپنی قانی حیثیت دوبارہ حاصل کر لیں یا پھر   اُوور اِسٹے جرمانہ ادا کرکے اپنے ملک واپس جانے کے اجازت حاصل کر لیں۔ یاد رہے کہ متحدہ عرب امارات میں جب ویزا کینسل ہوتا ہے تو غیر ملکیوں کے ایک گریس پیریڈ بھی ملتا ہے جس کے  دران وہ بغیر کسی جرمانے کے پھر سے کوئی ویزا حاصل کر سکتے ہیں یا پھر واپس اپنے ملک جا سکتےہیں عام طور پہ گریس پیریڈ زیادہ سے زیادہ 28  دن تک ہو سکتا ہے ویزا کی نوعیت کے مطابق یہ وقت 28 دن سے کم بھی ہو سکتا ہے۔ متحدہ عرب امارات میں گریس پیریڈ ختم ہونے کے بعد اُوور اِسٹے ہونے کی صورت میں فی یوم کے حساب سے جرمانہ بھی ادا کرنا پڑتا ہے جو کہ اوواِسٹے ہونے کے پہلے دن کے لیے 125 درہم ہوتا ہے جبکہ پہلے دن کے بعد باقی تمام دنوں کے لیے فی یوم 25 درہم رکھا گیا ہے ۔   متحدہ عرب امارات سے باہر  موجود غیرملکیوں کے وزٹ ویزے فی الحال ہولڈ پہ رکھے ہوئے ہیں تاہم متحدہ عرب امارات کے اندر موجود غیر ملکیوں اور ان کی فیملی  (ڈیپنڈنٹس) کے لیے ویزوں  کے اجراء کی سہولت برابر فراہم کی جارہی ہے۔عام طورپہ 2200 درہم ادا کرکے 100 دن تک   کا وزٹ ویزا حاصل کیا جا سکتا ہے، یہی قانون متحدہ عرب میں پیدا ہونے والے نوزائیدہ بچوں پہ بھی لاگو ہوگا۔  یہ معلومات اب تک درست ہےمگر متحدہ عرب امارات کی حکومت اس سلسلے میں مزید اِعلانات بھی کر سکتی ہے۔

پانچویں کیٹیگری ایسے لوگوں کی ہے کہ جن کے وِزٹ ویزے ہولڈ پہ رکھے ہوئے ہیں اور وہ اس وقت متحدہ عرب امارات سے باہر ہیں ایسے لوگوں کے ویزے کینسل تصور نہیں کیئے جائیں گے بلکہ جیسے ہی متحدہ عرب امارات کو سیاحوں کے لیے کھولاجائے گا تو ہولڈ پھی رکھے ہوئے ویزوں کو بھی ایکٹیویٹ کر دیا جائے گا اور ویزا کے حامل افراد ان ویزوں کے ساتھ سفر کرسکیں گے توقع ہے کہ جولائی 2020 سے متحدہ عرب امارات میں سیاحت  شروع ہو جائے گی-

یاد رہے کہ ویزوں اور اماراتی شناختی کارڈز میں آٹومیٹک توسیع  اور  ایمنسٹی یا جرمانوں کے معافی صرف ایسے ویزوں کے لیے ہے جو کہ ایکسپائر ہوئے ہیں کینسل شدہ ویزوں کے لیےفی الحال کوئی توسیع یا معافی کا اِعلان نہیں کیا گیا۔

مندرجہ بالاامور یا ویزوں سے متعلق کسی بھی قسم کی کوئی معلومات چاہئیے ہوں تو آپ متحدہ  عرب امارات کے آمر ویزا سنٹر کو ای میل  یا فون کال کر سکتے ہیں ان کا ای میل اور فون نمبر درجہ ذیل ہے

Email: Amer@dnrd.ae

Phone: 0800 5111

One thought on “Who can get UAE visa extension and amnesty – Big Announcements by UAE Govt.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: